شہیدستان ۔۔۔ عارف چنگیزی

پاکستان کا نام شہیدستان رکھاجائے۔
کیونکہ یہاں
بےگناہ بھی شہید ہے اور دہشتگرد بھی شہید۔
شرابی بھی شہید ہے  اور کتا بھی شہید۔
ریپ کرنےوالا بھی شہید ہے اور ریپ ہونےوالا بھی شہید۔
قاتل بھی شہید ہے اور مقتول بھی شہید۔
معلوم بھی شہید ہے اور نامعلوم بھی شہید۔
ڈرون حملوں میں مرنے والا بھی شہید ہے اور حادثے میں ہلاک ہونے والا بھی شہید۔
ٹرین میں مرنے والا بھی شہید ہے اور پیٹرول کے لالچ میں جھلس کر مرنے والا بھی شہید۔
خودکشی کرنے والا بھی شہید ہے اور تختہ دار پر لٹک کر سزا پانے والا بھی شہید۔
مجرم بھی شہید ہے اور ملزم بھی شہید۔
کافر بھی شہید ہے اور مسلمان بھی شہید۔
لٹنے والا بھی شہید ہے اور لوٹنے والا بھی شہید۔
راست گو بھی شہید ہے اور دغا باز بھی شہید۔
یہاں سیاسی شہید بھی ہے انقلابی شہید بھی۔ پولیس مقابلے میں مرنے والا شہید بھی ہے اور ڈکیتی کے دوران مرنے والا شہید بھی۔
اور سب سے اہم بات! غریبوں کے گھر سے زیادہ مہنگے شہیدوں کے مزار ہوتے ہیں۔

One thought on “شہیدستان ۔۔۔ عارف چنگیزی

  • 07/12/2020 at 10:09 pm
    Permalink

    خوب بیان کدے صورتحال رہ

    Reply

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *